ایران میں موبائل گیم کلیش آف کلینز پر ’پابندی‘

Header Banner

ایران میں موبائل گیم کلیش آف کلینز پر ’پابندی‘

  Thu Dec 29, 2016 14:57        Technology, Urdu

ایران میں حکام نے مشہور موبائل گیم ’کلیش آف کلینز‘ پر ملک میں محدود پابندی عائد کر دی ہے۔

ایک حکومتی کمیٹی کی جانب سے اس پابندی کا مطالبہ ماہر نفسیات کی اس رپورٹ کے بعد کیا گیا تھا جس میں بتایا گیا تھا کہ اس گیم سے تشدد اور قبائلی تنازعات کو حوصلہ افزائی ملتی ہے۔

انٹرنیٹ سے متعلقہ کمیٹی نے تنبیہ کی ہے کہ اس موبائل ایپلیکشن کے زیادہ استعمال سے نوجوانوں کی گھریلو زندگی پر منفی اثرات مرتب ہوسکتے ہیں اس لیے اس گیم کو کھیلنے کے لیے عمر کی حد متعن کر دی جائے۔

تاہم صارفین کا کہنا ہے کہ اس پابندی کے بعد ملک میں تمام صارفین کو اس گیم تک رسائی میں مشکل آ رہی ہے۔

رواں سال کے آغاز میں جمع کیے گئے اعداد و شمار کے مطابق ایران میں موبائل کھیلنے والے افراد میں سے 64 فیصد یہ گیم کھیل چکے ہیں۔

کلیش آف کلینز پر ایران بھر میں پابندی کا فیصلہ 27 دسمبر سے نافذ العمل کیا گیا ہے۔

کچھ ویب سائٹس پر یہ اطلاعات سامنے آئی تھیں کہ ایران میں بہت سارے صارفین کو اس گیم تک رسائی حاصل کرنے میں مشکلات درپیش آرہی تھیں جس کے لیے انٹرنیٹ کنکشن بھی ضروری تھا۔ کچھ ایرانی صارفین کا کہنا تھا کہ مقامی میڈیا کی اطلاعات کے مطابق اس گیم کو کھیلنے کے لیے عمر کی حد متعین کی گئی لیکن بعدازاں تمام صارفین اس سے متاثر ہوئے۔

تاہم کچھ صارفین کا کہنا ہے کہ انھوں نے اس پابندی سے بچنے کے لیے متبادل راہ نکال لی ہے۔

ایران کے نائب اٹارنی جنرل ڈاکٹر عبدالسلام خورم آبادی کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا کیا ہے کہ کمیٹی کی ’اکثریت‘ نے اس گیم کو کھیلنے کے لیے عمر کی حد متعین کرنے کی حمایت کی ہے۔

ایران میں اس سے قبل بھی مشہور گیموں کے خلاف کارروائی کی گئی ہے۔ اگست میں پوکے مان گو پر پابندی عائد کی گئی۔

کلیش آف کلینز گیم فن لینڈ‌ کی فرم سپر سیل کی جانب سے تیار کی گئی تھی اور اس کا کہنا تھا کہ تقریباً دس کروڑ افراد یہ گیم روزانہ کھیلتے ہیں۔

جولائی میں چینی کمپنی ٹینسینٹ نے سپرسیل کے ساتھ معاہدے کے بعد 3۔84 فیصد حصص تقریباً 12 ارب ڈالر میں خرید لیے تھے۔


   Iran mobile game ,Ban on mobile game, trouble cleaners